پروبائیوٹکس اینٹی بائیوٹک سے وابستہ اسہال کی روک تھام میں کارآمد ہیں، پیڈیاٹرک ماہرین

پاکستان کے معروف پیڈیاٹرک ماہرین کا کہنا ہے کہ پروبائیوٹکس معدے کی متعدد بیماریوں کا محفوظ علاج ہے۔ طبی ماہرین صنوفی پروبائیوٹکس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔
لاہور میں صنوفی کے زیر اہتمام پروبائیوٹکس پر سیمینار کا انعقاد کیاگیا ۔
سیمینار سے خطاب میں ماہرین نے پروبائیو ٹکس پر روشنی ڈالی ۔ان کا کہنا تھا کہ انسانی جسم میں تقریباً ایک کلوگرام اچھے اور برے دونوں بیکٹیریا موجود ہوتے ہیں۔ پروبائیوٹکس صحت مند بیکٹیریا ہیں جو آنتوں کی تکلیف سے نجات میں مدد کرتے ہیں اور ہاضمہ کی تکلیف اور دیگر متعلقہ پیچیدگیوں کو دور کرتے ہیں۔

پروبائیوٹکس ایک مضبوط مدافعتی نظام تیار کرنے میں اچھے بیکٹیریا کی مدد کرتے ہیں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان کے سرکردہ پیڈیاٹریشین ڈاکٹر عبد الغفار بلو ، پروفیسر ڈاکٹر ہما ارشد چیمہ، پروفیسر ڈاکٹر اقبال میمن اور پروفیسر ڈاکٹر ساجد مقبول نے پروبائیوٹکس کے بطور علاج استعمال اور فوائد کے بارے میں جامع معلومات فراہم کیں۔

ڈاکٹر عبد الغفار بلو کا کہنا تھا کہ پروبائیوٹکس محفوظ ہیں اور یرقان کا علاج کرنے اور بچوں کی زندگیاں بچانے میں مدد کرتے ہیں۔ ماہرین نے مزید بتایا کہ پروبائیوٹکس غذا میں پائے جاتے ہیں اور اکثر انہیں غذائی اجزاء سمجھا جاتا ہے۔ کچھ ریشہ دار اشیائے خوردو نوش اور دہی پروبائیوٹکس کی اچھی مثال ہیں۔ مقررین نے معالج کے مشورے کے مطابق استعمال کی اہمیت پر اتفاق کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں