ویمن کانفرنس فار پیس کے عنوان سے تقریب کا انعقاد، خواتین کرکٹرز کی بڑی تعداد میں شرکت

لاہور: لودھراں پائلٹ پراجیکٹ (ایل پی پی) نے عزم پاکستان کے ساتھ مل کر امن کی تعمیر میں خواتین کے کردار کو فروغ دینے، اور خواتین کے عالمی دن کے موقع پر تقریبات کا ایک سلسلہ منعقد کیا۔
اس سال کی مہم کا موضوع” بریک دی بائیس ” تھا جو بنیادی طور پر خواتین اور تمام انسانوں کے لیے تعصب، دقیانوسی تصورات اور امتیاز سے پاک دنیا کا تصور کرتا ہے۔ایل پی پی ایک منصفانہ معاشرے کا تصور کرتی ہے اور ایک ایسی دنیا کو فروغ دیتی ہے جو متنوع، مساوی اور جامع ہو۔ پچھلی دو دہائیوں سے، ایل پی پی نے خواتین کی برابری کو فروغ دیا ہے اور پنجاب اور سندھ کے صوبوں میں اپنی ٹارگٹ کمیونٹیز میں تعصب کو ختم کرنے کی کوشش کی ہے۔

ایونٹس کی سیریز کی خاص بات قذافی اسٹیڈیم میں جنوی پنجاب کرکٹ ایسوسی ایشن اور سندھ کرکٹ ایسوسی ایشن کی گرلز ٹیموں کے درمیان کراس ریجنل ویمن کرکٹ میچ منعقد ہوا۔ امریکی کونسل جنرل مسٹر ولیم کے مکانیول اس موقع پر مہمان خصوصی تھے۔
5 مارچ 2022 کو لاہور میں ویمنز کانفرنس آف پیس 2022 کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور اور امریکی کونسل جنرل لاہور مسٹر ولیم کے مکانیول نے کی۔
دیگر معززین میں چیف آف پارٹی عزم پاکستان پروگرام جناب علی رضا، محترمہ نبیلہ حکیم، خاتون محتسب پنجاب، ڈاکٹر فرزانہ باری، خواتین کے حقوق کی معروف کارکن، محترمہ عافیہ سلام، انسانی حقوق کی کارکن، اراکین صوبائی اسمبلی پنجاب، طلباء و طالبات شامل تھے۔ کراچی اور بہاؤالدین زکریا یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والی خواتین اور کمیونٹی کی خواتین رہنماؤں نے اس تقریب میں شرکت کی۔

مسٹر ولیم کے مکا نیول ، یو ایس کونسل جنرل لاہور نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ “جنس سے جڑے مسائل کو حل کرنا ضروری ہے اور جب ہم سب مل کر کام کریں گے تو ہم ان مسائل کو بہت تیزی سے حل کرنے کے قابل ہو سکتے ہیں۔
خواتین کو درپیش عدم مساوات کو دور کرنے کے لیے ہم سب ذمہ دار ہیں۔ امریکی حکومت امن کےعمل میں خواتین کی بامعنی شمولیت اور شرکت پر یقین رکھتی ہے اور اسے فروغ دیتی ہے۔ اکتوبر 2021 میں، ریاست ہائے متحدہ نے صنفی مساوات اور مساوات پر پہلی قومی حکمت عملی کا آغاز کر کے پورے بورڈ میں صنفی مساوات کو فروغ دینے کے لیے تاریخی قدم اٹھایا۔
امریکی محکمہ خارجہ خواتین اور لڑکیوں، ٹرانس جینڈر، مرد اتحادیوں، شراکت دار حکومتوں، سول سوسائٹی اور نجی شعبے کے ساتھ مل کر دنیا بھر میں اس ایجنڈے کو فروغ دینے کے لیے پرعزم ہے۔

گورنر پنجاب ، چوہدری محمد سرور نے کانفر س کی ابتدائی تقریب میں خطاب کیا۔ انہوں نے عورتوں کے عالمی دن کے موقع پر مبارک باد پیش کی اور خوشحال پاکستان کے لئے امن کے قیام اور برابری کو فروغ دینے میں عورتوں کے کردار کو سراہا۔
انہوں نے مزید کہا کہ حکومت پنجاب عورتوں ایمپاورمنٹ کے لئے زندگی کے ہر شعبہ میں برابری کو فروغ دینے کا عزم کرتی ہے۔
مسٹر علی رضا ، چیف آف پارٹی عزم پاکستان پروگرام نےسماجی ہم آہنگی کو فروغ دینے اور کھیلوں کو پول کے طرح استعمال کر کے خواتین لیڈرز کی انکی کمیونٹیز میں سپورٹ کرنے میں لودھراں پائلٹ پراجیکٹ کے کردار کو سراہا۔
انہوں نے کہا کہ ہمیں فخر ہے کہ ہم نے برابری اور سماجی ہم آہنگی کو فروغ دینے کاور عورتوں کو کردار کو تقویت دینے کے لئے 6500عورتوں کو انکے علاقوں میں اکھٹا کیا جن میں 62خواتین پارلیمنٹرین ، 2500خواتین کمیونٹی لیڈرز اور 700مدرسہ کی خواتین شامل ہیں ۔

لودھراں پائلٹ پراجیکٹ کے سی ای او ڈاکٹر محمد عبدالصبور نے تقریب میں شرکت کرنے والے تمام شرکاء اور معزز مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ “یہ پرامن کمیونٹیز کی تعمیر میں خواتین کے کردار کے مثبت سنگ میلوں کو اجاگر کرنے اور منانے کا وقت ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشرے میں وسیع تر امن، استحکام اور خوشحالی زندگی کے ہر شعبے میں خواتین کی بامعنی شرکت اور کردار کے بغیر ممکن نہیں۔ فیصلہ سازی میں ان کی شمولیت خاص طور پر اہم ہے۔
خا تون محتسب پنجاب، محترمہ نبیلہ حکیم نے کہا کہ بہت ساری مضبوط خواتین کے ساتھ یہاں آکر بے حد خوشی ہے اور یہ بتاتے ہوئے فخر ہے کہ محتسب آفس نے خواتین کو بااختیار بنانے، خاص طور پر وراثت کے حق میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں۔ معاشرے میں خواتین کے خلاف ہراسانی، اور امتیازی سلوک کو ختم کرنا بہت آگے ہے لیکن ہم اسے ختم کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔ انہوں نے تمام اسٹیک ہولڈرز کو پاکستان میں خواتین کو بااختیار بنانے کے لیے خواتین محتسب کے دفتر کے ساتھ ہاتھ ملانے کی دعوت دی۔
لودھراں پائلٹ پراجیکٹ سے مستفید ہونے والی کمیونٹی کی خواتین رہنماؤں نے اپنی کامیابی اور تبدیلی کی کہانیاں سامعین کے ساتھ شیئر کیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں