نیشنل گیمز تو دُور، 76 سالوں سے بلوچستان گیمز کا انعقاد تک نہیں کیا جاسکا

کوئٹہ(محمد شاہ دوتانی)صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں محکمہ کھیل حکومت بلوچستان نے پچلے تین سالوں میں بے پناہ کھیلوں کے قومی اور صوبائی ایونٹس سمیت ڈسٹرکٹس سطع پر سپورٹس مقابلے منعقد کرائیں۔ جس سے حکومت بلوچستان کی کھیلوں کے فروغ اور کھلاڑیوں کو کھیلنے کے زیادہ سے زیادہ مواقع فراہم کرنے کی واضع ثبوت ہے۔
لیکن ان تمام کے باوجود 76 سالوں سے بلوچستان گیمز کا انعقاد ممکن نہ ہوسکا۔ قیام پاکستان سے لیکر ابتک بلوچستان گیمز کا انعقاد نہ ہونا۔بلوچستان اولمپکس ایسوسی ایشن اور اسٹیک ولڈرز کی عدم توجہی ظاہر کررہی ہے۔
سپورٹس حلقوں نے وزیراعلیٰ بلوچستان، صوبائی وزیر کھیل اور سیکرٹری کھیل بلوچستان سے مطالبہ کیاہے کہ باقی تین صوبوں میں ہر سال باقائدہ صوبائی گیمز کا انعقاد کیاجاتاہے۔
پنجاب میں تو مختلف کھیلوں کی سرگرمیوں کا انعقاد کیاجاتاہے۔ اس کے برعکس بلوچستان میں باقی کھیلوں کے ایونٹس منعقد ہورہے ہیں۔لیکن نیشنل گیمز اور بلوچستان گیمز کا انعقاد نہیں ہورہا۔جوکہ افسوسناک عمل ہے۔سپورٹس حلقوں نے امید ظاہر کی ہے۔کہ موجودہ سیٹ اپ نیشنل گیمز سے قبل ہی بلوچستان گیمز کا انعقاد کرنے کیلئے اقدامات اٹھائیں گے۔
بلوچستان گیمز سے بلوچستان کے کھلاڑیوں کا نیشنل گیمز کیلئے تیاری بھی مکمل ہوگی اور وہ مزید بہتر طریقے سے باقی صوبوں اور ڈیپارٹمنٹل ٹیموں کے کھلاڑیوں کے ساتھ مقابلہ کرسکیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں