مطیع اللہ خان پاکستان ہاکی کےماتھے کا جھومر ہیں، انکی صحت کے لئے دعاگو ہوں،صدرپی ایچ ایف برگیڈیئررخالد سجاد کھوکھر

لاہور(سپورٹس لیکس)پاکستان ہاکی ٹیم کے مایہ ناز کھلاڑی 1960 روم اولمپکس گولڈمیڈلسٹ اولمپین مطیع اللہ خان کی عیادت کے لئے پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر برگیڈیئررخالد سجاد کھوکھر کی خصوصی ہدایات پر پی ایچ ایف وفد نےبہاولپور میں انکی رہائش گاہ کا دورہ کیا اور صدر پی ایچ ایف برگیڈیئر رخالد سجاد کھوکھر کی جانب سے پاکستان ہاکی کے مایہ ناز لیجنڈ کھلاڑی کی عیادت کی اور پھولوں کا گلدستہ پیش کیا۔

اس موقع پر پی ایچ ایف وفد کے رکن محمد ارشد سابق کانگریس ممبر پاکستان ہاکی فیڈریشن نے اولمپین مطیع اللہ خان کو صدر پی ایچ ایف کی جانب سے بھیجا گیا تہنیتی پیغام دیا ۔ 1960 روم اولمپکس گولڈمیڈلسٹ مطیع اللہ خان نے 1956 میلبورن اولمپکس اور 1964 ٹوکیو اولمپکس میں سلور میڈل بھی حاصل کیا اور 1962 جکارتہ ایشین گیمز میں پاکستان کی نمائیندگی کرتے ہوئے گولڈ میڈل حاصل کیا۔ پاکستان ہاکی کے تابناک ماضی کا حصہ بنے اولمپین مطیع اللہ خان کو گذشتہ دنوں خرابی صحت اور عارضہ قلب کی بناء پر وکٹوریہ ہسپتال بہاولپور داخل کرایا گیا تھا جہاں سے وہ روبصحت ہو کر اپنے گھر پہنچے۔
صدر پاکستان ہاکی فیڈریشن برگیڈیئر رخالد سجاد کھوکھر کی جانب سے اولمپکین مطیع اللہ خان کی صحت یابی پر پی ایچ ایف وفد نے تہنیتی پیغام پہنچایا اور اس موقع پر صدر پی ایچ ایف برگیڈیئر رخالد سجاد کھوکھر نے اولمپین مطیع اللہ خان سے بذریعہ ٹیلی فون بات بھی کی۔
اولمپین مطیع اللہ خان نے صدر پاکستان ہاکی فیڈریشن برگیڈیئر رخالد سجاد کھوکھر کا خصوصی شکریہ ادا کیا اور پی ایچ ایف وفد کی آمد پر اظہار تشکر کیا۔ یاد رہے کہ اولمپین مطیع اللہ خان کے بعد انکے بھتیجوں سمیع اللہ خان اور کلیم اللہ خان نے بھی دنیائے ہاکی میں عظیم نام کمایا اور پاکستان کا سبز ہلالی پرچم اقوام عالم میں بلند کیا۔
حکومت پاکستان نے اولمپین مطیع اللہ خان کی قومی کھیل میں انکی خدمات کے صلہ میں تمغہ امتیاز سے بھی نوازا اور انکے نام سے بہاولپور میں آسٹروٹرف ہاکی سٹیڈیم بھی منسوب کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں